صوبائی حکومت کے رمضان ریلیف کے تمام دعوے کےدھرے رہ گئے۔کراچی کے شہریوں کو پہلی تراویح پہلی رات پہلے روزے کو جو تکلیف اور اذیت پہنچائی گئی صوبائی حکومت اور کے الیکٹرک کے مستقبل کیلئے خطرے کی گھنٹی ثابت ہوگی. قاری محمد عثمان

کراچی :
جمعیت علماء اسلام کے صوبائی نائب امیر قاری محمد عثمان نےکہا کہ رمضان المبارک کی پہلی تراویح،پہلی سحری اور پہلے دن کو کے الیکٹرک کی لوڈشیڈنگ کا طویل دورانیہ بدترین ظلم ہے۔ صوبائی حکومت شہری عوامی مسائل کے حل اور کے الیکٹرک کے خلاف فوری اقدامات کرکے شہریوں کو رمضان ریلیف دے۔اس شدید گرمی میں مسلسل کریک ڈاؤن کسی بڑے حادثے کا سبب بن سکتا ہے۔وہ اسکواڈ کالونی میں حاجی ہمیش گل کی رہائش گاہ پر انکی اہلیہ کے انتقال پر اظہار تعزیت کے موقع پر گفتگو کررہے تھے۔ اس موقع پر ضلع شرقی کے جنرل سیکریٹری مولانا عاصم کریم، مولانا فتح اللہ، مولانا سلطان محمود،قاری میر حسن شہوانی اور دیگر رہنماء بھی موجود تھے۔قاری محمد عثمان نےکہا کہ صوبائی حکومت کے رمضان ریلیف کے تمام دعوے کےدھرے رہ گئے۔کراچی کے شہریوں کو پہلی تراویح پہلی رات پہلے روزے کو جو تکلیف اور اذیت پہنچائی گئی صوبائی حکومت اور کے الیکٹرک کے مستقبل کیلئے خطرے کی گھنٹی ثابت ہوگی۔صوبائی حکومت اور کے الیکٹرک انتظامیہ شہریوں کے صبر اور بد دعا کا امتحان نہ لے۔ روزے دار کی ایک آہ سب کو لے ڈوبے گی۔ انہوں نےکہا کہ بجلی کا مصنوعی بحران کئی عرصہ قبل شروع کیا گیا ہے۔صوبائی حکومت کو بر وقت اسکا ایکشن لینا چاہیئے تھا مگر سندھ حکومت عوامی مسائل کے حل میں رتی برابر دلچسپی نہیں لیتی۔قاری محمد عثمان نےکہا کہ کراچی میں پانی بجلی اور گیس کا بحران خطرناک صورتحال اختیار کر سکتا ہے۔ بجلی پانی اور گیس کے بغیر زندگی بسر کرنا مشکل ترین مرحلہ ہے صوبائی حکومت کو کراچی انتظامیہ،کے الیکٹرک، گیس اور واٹر بورڈ کے عملے کو فوری اور ہنگامی بنیادوں پر ایمرجنسی لگا کر کراچی کے شہریوں کو رمضان ریلیف دینا ہوگی ورنہ روزے کی حالت میں سڑکوں پر نکلنا اہل کراچی کو کسی بڑے حادثے کا شکار بنا دے گا جو بہرحال کسی بھی صورت میں تباہ کن ہوگا۔ انہوں نےکہا کہ وفاقی حکومت نے بھی کراچی سے سوتیلی ماں کا سلوک شروع کر رکھا ہے۔ کراچی بہرحال منی پاکستان اور پاکستان کا دل ہے اور جب دل کو سکون اور قرار والا ماحول نہیں ملے گا تو پھر انسان کا بچنا مشکل ہوجاتا ہے۔