حکومت رمضان آرڈیننس پر عمل درآمد یقینی بنائے. قاری محمد عثمان

کراچی:
جمعیت علماء اسلام کے صوبائی نائب امیر قاری محمد عثمان نے کہا کہ رمضان المبارک کی آمد کے ساتھ ہی اشیائے صرف غریب آدمی کی دسترس سے باہر ہوگئیں۔ شہر میں شدید گرمی کے باوجود پانی کی قلت،بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے۔حکومت عوام کی حالت پر رحم کرے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے مدرسہ اویس قرنی پی آئی بی کالونی میں جمعیت کے رہنماء قاری سیف الرحمن کے بھائی قاری مجیب الرحمن کی اہلیہ کے انتقال، اور جے یو آئی ضلع وسطی کے جنرل سیکرٹری لطیف الرحیم کے والد کے انتقال پر اظہار تعزیت اور جمعیت علماء اسلام کے بزرگ رہنماء مولانا حلیم الرحمن کی عیادت کے بعد جماعتی رہنماؤں اور کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر جمعیت علماء اسلام ضلع وسطی کے امیر مولانا عبدالرشید نعمانی، اور دیگر موجود تھے۔ قاری محمد عثمان نے کہا کہ رمضان المبارک کی آمد کے ساتھ ہی اشیائے صرف کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگی ہیں۔جس کی وجہ سے اشیائے صرف عوام کی دسترس سے باہر ہورہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے دعووں کے باجود شدید گرمی میں پانی کی قلت، بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ نے عوام کی زندگی اجیرن بنارکھی ہے۔ اس تمام تر صورتحال کا افسوس ناک پہلو یہ ہے کہ حکومت عوام کی داد رسی کے بجائے خاموش تماشائی کا کردار ادا کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کو چاہئے کی وہ فی الفور عوام کی مشکلات کا احساس کرتے ہوئے اشیائے صرف کی قیمتوں کو کنٹرول کرے۔اور شدید گرمی میں پانی کی قلت، بجلی اور گیس کی لوڈ شیڈنگ سے اہلیان شہر کو نجات دلائے۔